نواز شریف کا زرداری سے رابطہ، سیاسی حمایت طلب: ڈاکٹر شاہد مسعود کا دعویٰ

نواز شریف نے 72 گھنٹے قبل آصف زرداری سے رابطہ کیا۔ اس رابطہ کے بعد ہی میثاق جمہوریت کا پھر نام لیاگیا۔ نواز شریف کو خطرناک کھیل کی جانب دھکیلا جارہا ہے، ان کو ریلی کا مشورہ دینے والے کیا سکیورٹی کی ذمہ داری لیں گے۔ یہ انکشافات سینئر تجزیہ کار ڈاکٹر شاہد مسعود نے نجی ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کیے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے دبئی میں موجود آصف زرداری سے رابطہ میں کہا کہ میرے بعد آپ کی باری ہے تو جواب ملا کہ پتہ ہے۔ آصف زرداری نے کہا کہ آپ پرمشکل آتی ہے تو میں ساتھ دیتا ہوں لیکن مجھ پر برا وقت آئے تو آپ بھاگ جاتے ہیں۔ نواز شریف نے کہا کہ آپ کو جن سے تکلیف تھی چودھری نثار کو کابینہ سے آﺅٹ کررہا ہوں۔ زرداری نے کہا کہ آپ کا ساتھ اس شرط پر دوں گا کہ آپ میرا نام لے کر کہیں کہ میں آصف زرداری سے درخواست کرتا ہوں کہ جمہوریت کو بچائیں۔ جواب میں نواز شریف نے کہا کہ ایسا فوری کرنا مناسب نہ ہوگا۔ اس بات چیت کے بعد میثاق جمہوریت کو پھر نکالا گیا ہے، ابھی نواز شریف باقاعدہ نام لے کر زرداری سے درخواست بھی کریں گے۔